کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
نیشنل ٹی 20کپ میں کمنٹیٹر کے فرائض نبھانے والے مائیک ہیزمین نے کہا ہے کہ پاکستان نے مشکل وقت میں انگلینڈ کا دورہ کیا تھا ، انگلینڈ نے پاکستان کا دورہ منسوخ کر کے شرمناک فیصلہ کیا۔


نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے آسٹریلین کمنٹیٹر مائیک ہیزمین نے کہا کہ نیوزی لینڈ کے پاکستان سے سیریز منسوخ کرنے پر بہت افسوس ہوا ، دورہ منسوخ کرنے پر

ہر روز کچھ نئی خبریں سننے کو ملتی ہیں جس سے دکھ ہو رہا ہے ، نیوزی لینڈ نے دورہ منسوخ کیا لیکن پاکستان کے ساتھ سکیورٹی تھریٹ کی انفارمیشن شیئر نہیں کی،

جب آپ انٹرنیشنل لیول کی کرکٹ کھیل رہے ہوں تو سکیورٹی تھریٹ کا ثبوت دینا ہوتا ہے، ائیک ہیزن نے کہا کہ انگلش کھلاڑیوں سے پوچھے بغیر انگلینڈ نے پاکستان کا دورہ منسوخ کر دیا جو کہ غلط ہے ،

جب انگلینڈ میں کو رونا عروج پر تھا تو پاکستانی کھلاڑیوں نے اپنی جان خطرے میں ڈال کر انگلینڈ کا دورہ کیا ۔ میں نے جنوبی افریقہ میں کام کیا اور تب بھی انگلینڈ کو دورہ منسوخ کرتے ہوئے دیکھا،

انگلینڈ کے کھلاڑی جنوبی افریقہ پہنچے اور کو رونا کابہانہ کر کے دورہ منسوخ کر دیا، کسی ایک کھلاڑی کابھی کو رونا مثبت نہیں آیا ، لیکن انگلینڈ نے پھر بھی دورہ منسوخ کیا، آئی سی سی کو ان معاملات کو دیکھنا چاہئے ۔

مائیک ہیزمین نے مزید کہا ہے کہ دنیا کو بتانا چاہتا ہوں کہ پاکستان کرکٹ کیلئے دیگر ملکوں کی طرح محفوظ ملک ہے، میں نیشنل ٹی 20 کپ کو پوری طرح انجوائے کر رہا ہوں،

مجھے پاکستان مین خطرہ محسوس ہوتا تو میں نیشنل ٹی 20کپ میں کمنٹری کیلئے آتا؟۔ حال ہی میں جب جنوبی افریقہ نے پاکستان کا دورہ کیا تب بھی میں پاکستان میں تھا،

جنوبی افریقی کھلاڑیوں نے بھی کہا کہ انہیں پاکستان میں سکیورٹی کا کوئی مسئلہ نہیں، آسٹریلین کمنٹیٹر کا کہنا تھا کہ میں نے پاکستان میں کام کرکے ہمیشہ خوشی محسوس کی ہے،

پاکستان میں لوگ بہت پیار کرنے و الے ہیں، میں پاکستان میں کرکٹ کے قدرتی ٹیلنٹ سے کافی متاثر ہوں ، پاکستان کے کرکٹرز دنیا کے دیگر کھلاڑیوں کی نسبت مختلف صلاحیتیں رکھتے ہیں،

پاکستانی کھلاریوں کا بلے بازی اور باؤلنگ کا سٹائل مختلف ہے جو دنیا میں کہیں نظر نہیں آتا، جب بھی پاکستان آتا ہوں دو تین نئے باصلاحیت کھلاڑی ملتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں