کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین رمیز راجہ نے کہا ہے کہ اب نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے بعد آسٹریلیا بھی دورہ ختم کرنے کے لیے پر تول رہا ہے۔ نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ


برطانوی ہائی کمشنر کہہ چکے ہیں کہ انہوں نے دورہ پاکستان کے لیے گرین سگنل دے دیا تھا۔ رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ اب نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے بعد آسٹریلیا بھی دورہ ختم کرنے کے لیے پر تول رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اب پاکستان کرکٹ بورڈ کسی کے پیچھے نہیں بھاگے گا ،جو نہیں آنا چاہتے ان ٹیموں کے پیچھے نہیں پڑنا ہے بلکہ جو ٹیمیں ہماری قدر کرتی ہیں اُن سے کھیلیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کرکٹ میچز کابائیکاٹ نہیں کر سکتے، آئسولیشن میں نہیں رہ سکتے، مداحوں کو یہ سمجھنا چاہیے کہ

پاکستان تنہا نہیں رہ سکتا جبکہ اس کا صرف ایک علاج ہے کہ پاکستانی ٹیم کو بہتر بنائیں تا کہ دیگرممالک کھیلیں۔ چیئر مین پی سی بی نے کہا کہ پریشرمیں بھی ڈال سکتا ہوں، مجھے پتا ہےان کی آرگنائزیشن کیاہے،

آئی سی سی کو جانتا ہوں لیکن ہمارامؤقف سیدھا سادہ ہے، بلاک بنانے اورسیاست کرنے کی ضرورت نہیں ،سیاست اس وقت ہوتی ہے جب دل میں چورہو، ہمارے دل میں چور نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ پہلے صرف بھارت سے مقابلہ تھا اب میدان میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ سے بھی مقابلہ ہے۔ چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈرمیز راجہ نے کہا کہ ہمارا نظریہ اور قبلہ درست ہے، انہیں اپنا قبلہ اور نظریہ درست کرنا ہوگا۔

جب تک مفاد ہوتا ہے ہمیں استعمال کرتے ہیں۔ رمیز راجہ نے کہا کہ سیریزکھلاڑیوں کی جانب سے نہیں نیوزی لینڈ حکومت نے ختم کی اور جب ہم نے پوچھا آپ کیوں جا رہے ہیں انھوں نے بتایا ہی نہیں۔

رمیز راجہ نے مزید کہا کہ ڈومیسٹک کرکٹ کو بہتر کرنا ہے جس کیلئےمیں بورڈ میں آیا ہوں ہم اسکول، کلب اورفرسٹ کلاس کرکٹ کو بہتر کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ جنوبی افریقا جب انٹرنیشنل کرکٹ میں نہیں تھی توان کی کرکٹ ختم نہیں ہوئی تھی انہوں نے اپنی ڈومیسٹک کرکٹ کا معیار اچھا رکھا، 92 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل تک آئے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں