یواےای میں کھیلنا پاکستانی فاسٹ بولرزکیلئے نقصان دہ ثابت کیوں ہوا؟وہاب ریاض نےبڑی وجہ بتا دی

56

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
قومی فاسٹ بالر وہاب ریاض کا کہنا ہے کہ یو اے ای میں اپنی کرکٹ کھیلنا قومی پیسرز کیلئے نقصان دہ ثابت ہوا جہاں کنڈیشنز سپن بائولرز کیلئے زیادہ سازگار تھیں اور اسی وجہ سے انہیں بھی مناسب مواقع نہیں مل سکے۔


ان کا کہنا تھا کہ مستقبل کے بارے میں کوئی نہیں جانتا لہٰذا ممکن ہے کہ انہیں کچھ میچز مزید مل جائیں لیکن انہیں بطور کھلاڑی سلیکٹرز کی جانب سے نظر انداز ہونے پر مایوسی ہوئی کیونکہ وہی انہیں منتخب نہ کرنے کی وجہ بتا سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کیلئے خود کو اب بھی تیار سمجھتے ہیں مگر اس کا انحصار سلیکٹرز پر ہے کہ وہ کسے زیادہ موزوں اور بہتر سمجھتے ہیں۔ وہاب ریاض نے 2008ء میں انٹرنیشنل ڈیبیو کرنے کے بعد سے

اپنے کیریئر کے دوران 27 ٹیسٹ ، 91 ون ڈے اور 36 ٹی 20 میچ کھیلے ہیں۔ انہوں نے ٹی 20 ورلڈ کپ کے لیے پاکستانی سکواڈ میں اپنی شمولیت کے بارے میں بھی کھل کر اظہار خیال کہا۔