کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ ٹیم کےمایہ ناز سابق کپتان اور آل راﺅنڈر شاہد خان آفریدی کے ایک خواب کی تعبیر نے ان کی کی تقدیر بدل دی اور نیروبی میں خواب میں جودیکھا 2 روز بعد میدان میں ویسا ہی کر دکھا یا۔


تفصیلات کےمطابق شاہد خان آفریدی دنیا بھر کےکرکٹ شائقین کو اپنی جارحانہ اور دھواں دار بیٹنگ سے محفوظ کر کے انٹرنیشنل کیریئر کو الوداع کہہ چکے اور اب صرف چند گنی چنی لیگز میں ہی

ایکشن میں دکھائی دیتے ہیں مگر عالمی کرکٹ پر ان کے نقوش مدتوں یاد رکھے جائیں گے، یوں تو ان کی بہت یادگار اننگز ہیں لیکن محض اپنے دوسرے ہی انٹرنیشنل میچ میں 37 بالز پر

تیز ترین سنچری نے ان کی قسمت بدل کر رکھ دی تھی۔ اگرچہ بعد میں یہ ریکارڈ پہلے نیوزی لینڈ کے کورے اینڈرسن کے ہاتھوں ٹوٹ گیا اورپھر جنوبی افریقہ کے ابراہم ڈی ویلیئرز نے صرف 31 بالز پر تیز ترین سنچری کا ریکارڈ اپنے نام کیا، مگر

جو شہرت شاہد آفریدی کو اس اننگز سےحاصل ہوئی وہ کسی کے حصے میں نہیں آئی اور اسی نے ان کی قسمت بدل کر رکھ دی۔ شاہدخان آفریدی 1996ءمیں انڈر 19 ٹیم کے ساتھ

ویسٹ انڈیز کےدورے پر تھے جب انہیں مشتاق احمد کے انجرڈ ہونے کی وجہ سے 4 ملکی ٹورنامنٹ کیلئے بطور لیگ سپنر ٹیم میں شامل کیا گیا، نیروبی میں انہوں نےنیٹ پریکٹس میں جب

اپنی بیٹنگ کے جوہردکھائے تو وسیم اکرم اور وقاریونس بھی حیران رہ گئے، پہلا میچ کینیا سے تھا۔ انہوں نے صبح ساتھی کھلاڑی شاداب کبیر کو بتایا کہ خواب میں جے سوریا اور مرلی دھرن کو

چھکے جڑ رہے تھے لیکن اس دن کینیا سے ڈیبیو میچ میں ان کی بیٹنگ نہیں آئی اورباﺅلنگ میں 32 رنز دینے کے باوجود وکٹ سے محروم رہے، مگر2 دن بعد سری لنکا کےخلاف

ون ڈاﺅن پوزیشن پر وہ میدان میں اترے اور پہلی گیند روک کر اگلی کو باﺅنڈری کےپار پہنچا دیا اور پھر تاریخی لاٹھی چارج شروع ہواجس کی لپیٹ سے چمندا واس، ڈی سلوا، جے سوریا، دھرما سینا اور

مرلی دھرن بھی محفوظ نہ رہ سکے۔ شاہد خان آفریدی نے 37 گیندوں پر 11 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے سنچری مکمل کرکے نیروبی میں دیکھے گئے خواب کوحقیقت میں بدل دیا اور اس سے ان کی پوری زندگی ہی بدل گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں