ویسٹ انڈیز کے خلاف پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ کے لیے پاکستان کی 11 رکنی ٹیم کا اعلان، جو غلطی انگلینڈ میں ہوئی وہ ویسٹ انڈیز میں نا کرنے کا فیصلہ

3388

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے مابین 4 ٹی ٹونٹی میچز پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ 28 جولایی بروز بدھ کو کھیلا جایے گا، میچ پاکستانی وقت کے مطابق رات 8 بجے کھیلا جایے گا، پاکستانی ٹیم کی تیاریاں زورو شور سے جاری ہیں


پریس کانفرنس کرتے ہوئے مصباح الحق نے انگلینڈ کے ہاتھوں پہلے ون ڈے اور پھر ٹی ٹوئنٹی سیریز میں شکست کے بعد قومی ٹیم کا دفاع کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم ورلڈکپ کے لیے فائنل کمبی نیشن کی جانب بڑھ رہے ہیں،

تاہم مڈل آرڈر کا مسئلہ موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ورلڈکپ کی تیاری کر رہے ہیں، ویسٹ انڈیز میں ہر گیم اہم ہے، ہوم ٹیم کیخلاف اچھا پرفارم کرکے اعتماد بحال کریں گے۔

ٹیم کے سینئر ممبر محمد حفیظ کی پرفارمنس پر بات کرتے ہوئے مصباح الحق کا کہنا تھا کہ حفیظ اس طرح رنز نہیں کر پا رہے جیسا کہ ماضی میں کیے ہیں۔


ہیڈ کوچ کا کہنا تھا کہ مجموعی طور پر ٹیم بہتر ہے، کمزوریوں پر قابو پالیں تو اچھے نتائج دیں گے۔ نوجوان کرکٹر اعظم خان کا دفاع کرتے ہوئے مصباح کا کہنا تھا کہ

اعظم خان کو ایک اننگز کی بنیاد پر جج نہیں کرسکتے۔ انھوں نے انگلینڈ کے خلاف شکست پر بات کرتے ہوئے کہا کہ انگلش سرزمین پر ہمیں کنڈیشنز بہت زیادہ مختلف نہیں ملی تھیں۔

دوسری جانب کپتان بابر اعظم نے کہا ہے کہ میرے اوپر کپتانی کا کوئی پریشر نہیں ہے۔ جب میں بیٹنگ کرتا ہوںتو بیٹنگ پر میرا فوکس ہوتا ہے۔ آپ کپتانی کے بارے میں فیلڈ میں سوچتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق پاکستانی ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہونے کا امکان ہے
شرجیل خان، فخر زمان، بابر اعظم ، محمد رضوان، محمد حفیظ، سہیب مقصود، اماد وسیم، شاداب خان، محمد حسنین، حسن علی، اور شاہین شاہ آفریدی شامل ہیں، مزید پچ اور موسم دیکھ کر ہتمی فیصلہ کیا جائے گا،