کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان اور انگلینڈ کے کھلاڑیوں نے جو پہلا ایک روزہ میچ کھیلا ہے، اس میں دونوں کے تجربہ میں کوئی مقابلہ نہیں تھا، پاکستان کے کھلاڑیوں کے پاس 4 گنا زیادہ تجربہ اور اسکور تھا لیکن اس کے باوجود انگلش ٹیم کے ناتجربہ کار پلیئرز نے مات دے دی.


پہلے ون ڈے انٹرنیشنل میچ میں پاکستان کی بیٹنگ لائن کو تہس نہس کرکے دکھ دینے والے ثاقب محمود کا کہنا ہے کہ پاکستانی کھلاڑیوں نے جارحانہ انداز میں کھیلنے کے چکر میں وکٹیں گنوائیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان ٹیم نے بڑے شاٹس لگانے کی کوشش کی لیکن ہم نے اٹیکنگ انداز میں فیلڈنگ کی، امید ہے کہ ہمارے کھلاڑیوں کو اس جیت سے اعتماد حاصل ہوگا۔

دوسری جانب بین سٹوکس کا کہنا ہے کہ انہوں نے کھلاڑیوں کو یہی پیغام دیا تھا کہ وہ حالات کا مزہ لیں اور میچ میں وہی کرے جو وہ اپنی کاؤنٹیز کیلئے کرتے ہیں۔


بابر اعظم نے کہا کہ آج کے میچ کا سارا کریڈٹ انگلینڈ کی ٹیم کو جاتا ہے جنہوں نے بہت اچھا کھیل پیش کیا۔ ہماری ٹیم مومینٹم نہیں پکڑپائی اور نہ ہی کوئی بڑی پارٹنر شپ لگ سکی۔

فخر زمان جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز سے ہی فارم میں ہیں اور انہوں نے آج کے میچ میں بھی اپنی فارم برقرار رکھی۔ بابر اعظم کا کہنا تھا کہ ہم نے لارڈز کے میچ پر نظریں رکھی ہوئی ہیں،

ہمیں سخت محنت کرنی ہوگی اور جیت کیلئے بہترین کھیل پیش کرنا ہوگا۔ انشااللہ اگلے میچ میں جیت کیلئے جان لڑا دیں گے۔

ذرائع کے مطابق پاکستانی ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہونے کا امکان ہے
فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم ،محمد رضوان ، سعود شکیل ، سہیب مقصود، فہیم اشرف ،شاداب خان ، حسن علی ، حارث رؤف ،اور شاہین شاہ آفریدی شامل ہیں، مزید پچ اور موسم دیکھ کر ہتمی فیصلہ کیا جائے گا،

اپنا تبصرہ بھیجیں