لاہور قلندرز کےہیڈ کوچ عاقب جاوید ٹیم کے کھلاڑیوں پر برس پڑے، دکھی دل کےساتھ حیران کن بات کہہ دی

151

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پی ایس ایل کی ٹیم لاہور قلندرز کے ہیڈ کوچ عاقب جاوید اپنے بیٹسمینوں پر برس پڑے۔ عاقب جاوید نے کہا کہ ٹیم بھی مضبوط تھی آغاز بھی اچھا تھا اختتام پر بہت افسوس ہوا، کوئی توقع نہیں کر رہا تھا کہ


لاہور قلندرز اس مرتبہ کوالیفائی نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ چھ میچوں میں ٹاپ پانچ بیٹسمینوں نے ایک ففٹی نہیں کی، ٹاپ فائیو رنز نہیں کریں گے تو کوئی کیسے جیت سکتا ہے،

وہی بیٹسمین تھے جنہوں نے پہلے میچز میں رنز کیے تھے۔ عاقب جاوید نے کہا کہ ہماری سینئر اور تجربہ بیٹنگ فلاپ ہوئی ہے ، بیٹسمینوں کی وجہ سے مایوسی ہوئی،

میچز میں کوئی چیلنج نہیں تھا لیکن پھر بھی کسی نے آغاز نہیں دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کونسا 10 رنز کی اوسط سے رنز کرنا تھے چھ کی اوسط سے رنز نہیں ہوئے،


نہ اسٹرائیک بڑھایا نہ وکٹیں بچائیں بس آؤٹ آؤٹ یہی ہار کی وجہ ہے۔ ہیڈ کوچ عاقب جاوید نے کہا کہ آخر میں عاقب جاوید کا ہی قصور نکلے گا، عاقب جاوید اور ثمین رانا نے

ڈرافٹ میں مضبوط ترین ٹیم بنانے کی کوشش کی ، میدان میں بیٹسمینوں نے کھیلنا ہے اب سوچتے ہوں گے کیا کِیا۔ عاقب جاوید نے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ ٹیم کو سہولیات دیں ، ٹریننگ دی ،

اب ساری ذمہ داری مجھ پر ڈالنی ہے تو ٹھیک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے منیجمنٹ میں کئی تبدیلیاں کیں ملکی اور غیر ملکی آئے پھر بھی نہیں جیتے ، لوگ سمجھتے ہیں کہ میری شکل بدلنے سے

شاید چمتکار ہو جائے گا ، اگر میں نہیں ہوں گا تو کیا ہو گا ، کسی نے تو یہ کام کرنا ہے نا ۔ عاقب جاوید نے کہا کہ میرا تو ٹیم کو فائدہ ہونا چاہیے جو سارا سال کام کرتا ہے۔