آپ کی ڈبل سینچری صرف 7 رنز سے رہ گئی کیا آپ کو اس بات کا دکھ ہے؟ صحافی کے سوال پر فخر زمان نےایسا جواب دے دیا کہ پاکستانیوں کو بھی ان پرفخر ہوگا

184

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
جنوبی افریقا کے خلاف دوسرے ون ڈے میں 193 رنز کی دھواں دھار اننگز کھیلنے والے فخر زمان ‏نے کہا کہ یہ نہیں کہہ سکتا کہ یہ میری سب سے اچھی اننگز ہے۔ فخرزمان نے کہا کہ اچھی اننگز تھی، ‏پہلے شروع میں تھوڑا ٹائم لیا،


پچز ایسی ہیں کہ اگر شروع کے 10 اوورز کھیل لیں تو ٹاپ آرڈر ‏کیلئے بیٹنگ آسان ہو جاتی ہے۔ فخر زمان نے کہا کہ پلان یہ ہی تھا کہ پہلے 8 اوورز اور پھر اگلے 10 اوورز

آرام سے کھیلنا ہے، نئے آنے والے کے لیے مشکل ہوتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پلان یہی تھی کہ چھوٹی باؤنڈری کو ہدف بنایا جائے جب رن مطلوبہ رن ریٹ 11 ‏پر گیا تو

جارحانہ کھیل شروع کیا، کوشش کی پارٹنرشپ لگے لیکن ہم نے زبردست مزاحمت کی اگر ‏تھوڑے رنز کم ہوتے تو میچ جیت جاتے اور میچ جیت جاتے تو بہت خوشی ہوتی،

ڈبل سنچری نہ ہو نے کا دکھ نہیں بلکہ دکھ یہ ہے کہ ہم میچ نہیں جیت سکے۔ فخر زمان نے کہا کہ مجھے میچ نہ جتوانے کا افسوس ہے۔ میں نے پوری کوشش کی اور آخر تک فائٹ کیا۔

اپنی غلطی سے رن آئوٹ ہوا ۔ پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ بدقسمت رہے کہ اچھا آغاز نہیں مل سکا، یہ میری ذمہ داری تھی کہ گیند پر نظر رکھتا کہ گیند کدھر آرہی ہے

میں حارث رئوف کو دیکھ رہا تھا، قوانین کے حوالے سے جو باتیں ہیں وہ میچ ریفری دیکھیں گے۔ فخر زمان نے کہا کہ اگرکوئی بیٹسمین ساتھ ہو تا تو ہدف آسان ہو جاتا۔