انڈیا پاکستان باہمی سیریز! بھارتی کرکٹ بورڈ کا جواب بھی آگیا،سیریز کب ممکن ہو سکےگی بتا دیا گیا

200

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان سے سیریز کے معاملے پر بھارتی بورڈ نے ایک بار پھر گیند اپنی حکومت کے کورٹ میں ڈال دی۔ پاکستان اور بھارت کی سیاسی کشیدگی میں حالیہ کچھ عرصے کے دوران کمی آنے کے بعد گزشتہ دنوں


گزشتہ دنوں یہ اطلاعات زیر گردش تھیں کہ پڑوسی ملکوں میں باہمی مقابلوں کیلئے راہ ہموار ہونے لگی ہے اور رواں سال ٹی ٹونٹی سیریز ہونے کا امکان ہے، پی سی بی کو ممکنہ میچز کیلئے

تیار رہنے کا بھی کہا گیا ہے۔ دوسری جانب چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے روایتی حریفوں کے مابین سیریز کے تاثر کو مسترد کر دیا تھا، بھارتی میڈیا میں بھی مسلسل

ایسی رپورٹس سامنے آرہی ہیں کہ فی الحال اس حوالے سے کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی۔ گزشتہ روز بی سی سی آئی کے نائب صدر راجیو شکلا نے واشگاف الفاظ میں بتایا کہ


پاکستان سے باہمی سیریز کے حوالے سے فی الحال کوئی بات چیت نہیں ہوئی، دونوں بورڈز میں اس حوالے سے حالیہ کچھ عرصے کے دوران کوئی رابطہ یا تبادلہ خیال نہیں ہوا ہے۔

انھوں نے کہا کہ گذشتہ 10سال میں بھارتی کرکٹ بورڈ کا ایک ہی موقف رہا ہے کہ جب تک ہماری حکومت اجازت نہیں دیتی پاکستان کے ساتھ کوئی باہمی سیریز نہیں ہوسکتی۔

یاد رہے کہ رواں سال ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کی میزبانی سمیت بھارتی ٹیم کا شیڈول بہت مصروف ہے جسے دیکھتے ہوئے روایتی حریفوں کے درمیان کسی بھی باہمی سیریز کا امکان نظر نہیں آتا۔

پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں آئی سی سی ایونٹس میں تو آمنے سامنے ہوتی ہیں مگر باہمی سیریز کے معاملے پر جمود طاری ہے، دونوں ٹیموں کے مابین آخری میچ

انگلینڈ میں کھیلے جانے والے ورلڈکپ 2019ء میں ہوا تھا، باہمی سیریز میں آخری مرتبہ روایتی حریف 13-2012ء میں مدمقابل ہوئےتھے جب پاکستان ٹیم محدود اوورز کے میچز کھیلنے کیلیے بھارت گئی تھی۔