عرفان پٹھان نے پاکستان ٹیم کے نیاپنڈورا باکس کھول دیا

705

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
سابق بھارتی کرکٹر عرفان پٹھان کا کہنا ہےکہ 2007 کے ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں پاکستان بال آؤٹ قانون سے واقف نہیں تھا، بھارتی ٹیم نے اس کی تیاری کر رکھی تھی۔ بھارتی میڈیا کےمطا بق سابق کرکٹر عرفان پٹھان نے


عرفان پٹھان نے 2007 ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کی یادیں تازہ کر تے ہوئے بتا یا کہ پاکستانی کپتان نے پریس کانفرنس میں بتایا تھا کہ وہ بال آؤٹ قانون کےبارے میں نہیں جانتے تھے،

بال آؤٹ کے دوران انہیں اس بات کا علم نہیں تھا کہ ان کے بولرز کو مکمل رن اپ کر نا چاہئے یا آدھا رن اپ کر نا چاہئے۔ عرفان پٹھان نےکہا کہ پاکستانی ٹیم کے برعکس

ہم اس کے لیے پوری طرح تیار تھے اور نتیجہ سب کے سامنے ہے، بھارت نے بال آؤٹ جیتا اور ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کےفائنل میں پاکستان کو شکست دے کر ٹائٹل بھی اپنے نام کرلیا۔


دوسری جانب رابن اتھپا کا کہناتھا کہ میچ سے قبل ہم وارم اپ کے بعد کوئی کھیل کھیلتے تھے، اس دوران پرساد نے فٹ بال کھیلنے کے بجائے بال آؤٹ کھیلنے کا مشورہ دیا تھا، بیٹسمینوں میں روہت شرما اور سہواگ اکثر آؤٹ ہو جاتے تھے۔

رابن اتھپا نے بتا یا کہ جب پاکستان کے خلاف میچ برابر رہا تو ہم بہت پرجوش تھے، ہمیں خوشی تھی کہ ایک وقت ہم تقریباً میچ ہار گئے تھے اور آخر تک ہم اسے برابر کرنے میں کامیاب رہے۔

انہوں نے کہا کہ سری سانت نے میچ میں شاندار بولنگ کی اور میچ برابر رہا، دھونی نے بھی اپنے پہلے ٹورنامنٹ میں بطور کپتان بڑے اعتماد کامظاہرہ کیا۔

رابن اتھپا کے مطابق ایک بولر دھونی کے پاس گئے اور کہا کہ میں بولنگ کر کے اسٹمپ کو ہٹ کر سکتا ہوں، دھونی نے بھی کچھ کہے بغیر انہیں بولنگ کی اجازت دے دی تھی۔