کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پی سی بی کے سابق چیف سلیکٹر اور قومی ٹیم کے سابق کپتان انضمام الحق نے پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن کے التواء کو پاکستان میں انٹرنیشنل میچز کیلئےخطرہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اب غیر ملکی کرکٹرز انتظامات ناکافی ہونے کا جواز دے سکتے ہیں۔


تفصیلات کے مطابق انضمام الحق نے اپنے بیان میں کہا کہ پی ایس ایل کے گزشتہ سیزن میں بھی کو رونا وائرس کی وجہ سے میچز التواء کا شکار ہوگئے تھے اور اس بار بھی یہی ہوا

جس کے باعث اب غیر ملکی کرکٹرز اور ٹیمیں کہہ سکتی ہیں کہ یہاں انتظامات ناکافی ہیں، مستقبل میں مسائل پیدا ہوسکتے ہیں، سننے میں آیا ہے کہ کرکٹرز کو ان کے بورڈز اور

ملکوں کی جانب سے واپسی کیلئے ہدایات ملی ہیں، طویل انتظار کے بعد پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کے دروازے کھلے، کیا ایسی صورتحال میں کوئی ملک اپنے کھلاڑیوں کو یہاں بھیجنے کیلئے تیار ہو گا؟


سابق چیف سلیکٹر کا کہنا تھا کہ سپانسرز کیلئے ہم نے ٹورنامنٹ تو شروع کردیا لیکن غلطیوں کا بھاری نقصان ہوا ہے، اگر ہم نے ان مسائل پر قابو پانے کیلئے درست اقدامات نہ اٹھائے اور

معاملے کو دبا دیا تو اس طرح کے واقعات دوبارہ ہوں گے، ہمیں ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے انہیں آئندہ معاملات سے دور رکھنا ہو گا، ہمیں دنیا کو بتانا ہوگا کہ

ایکشن لے سکتے ہیں، اس طرح ایک مثال بھی قائم ہوگی اور لوگ آئندہ غلطیوں سے گریز کریں گے، پوری تحقیق کی جائے کہ کس نے بائیو ببل توڑا، تمام ٹیمیں ایک ہی ہوٹل میں تھیں، خدشہ ہے کہ مزید کئی کھلاڑیوں کے ٹیسٹ بھی مثبت آجائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں