بارہ نمبر کی ٹیم کو نہیں بلکہ جنوبی افریقہ کوشکست دی ہے لیکن. مصباح الحق نےناقدین کو کھل کر جواب دیدیا

220

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق کا کہنا ہےکہ ‏ہم نے 12 ویں نمبر کی ٹیم کو نہیں بلکہ جنوبی افریقہ کو شکست دی ہے لیکن جیت کے باوجود خامیوں پر نظر ہے، صرف افتخار احمد کو


افتخار احمد کو ہی نہیں چانسز دیے گئے اس کے علاوہ بھی کئی کھلاڑیوں کو چانس ملے، اب ان کے پاس پی ایس ایل کا موقع ہے، کھیلیں ، پرفارم کریں اور سلیکشن کی دوڑ میں شامل رہیں،

ان کا کہنا تھا کہ میں نے کبھی خود کو غیر محفوظ محسوس نہیں کیا، نتائج ہمارے کنٹرول میں نہیں ہیں اور نہ ہمارے کنٹرول میں یہ ہے کہ بورڈ نے ہمیں کب تک رکھنا ہے،

ہماری توجہ میچز پر ہوتی ہے اور اہم بات یہ ہے کہ ہم سیریز جیتے ہیں۔ جنوبی افریقہ سے ٹی ٹوئنٹی سیریز جیتنے کے بعد ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئےمصباح الحق نے کہا کہ


مصباح الحق نے کہا کہ جیت جیت ہو تی ہے، لیکن ہم کوئی نمبر 12 کی ٹیم کے ساتھ نہیں کھیل رہے تھے، یہ بات بھی درست ہے کہ جنوبی افریقہ کی ٹیم میں بڑے پلئیرز نہیں تھے لیکن

ان کے بعد یہ افریقہ کے بہترین ٹی ٹوئنٹی پلئیرز ہیں، ان کے خلاف جس طرح فائٹ کرکے دو میچز میں کامیابی حاصل کی گئی ہے اس سے کھلاڑیوں کے اعتماد میں اضافہ ہوگا۔

ہیڈ کوچ نے مزید کہا کہ ابھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے، بلے بازوں کو سپن بولنگ کھیلنے میں مشکل کا سامنا ہے، سپن کے خلاف بیٹنگ اچھی کرنا ہو گی اور اس پر کام کریں گے،

ورلڈکپ بھارت میں کھیلا جانا ہے، اگرچہ ورلڈکپ ابھی سر پر نہیں ہے، اس میں ابھی وقت ہے اور اس دوران بہت میچز کھیلنے ہیں، ٹیم میں شاداب خان، عماد وسیم اور محمد حفیظ جیسے کھلاڑی نہیں تھے، ان کی واپسی ہونا ہے۔