مونچھیں ہو ں تو فواد عالم جیسی ورنہ نہ ہوں،شعیب اختر نے فواد عالم کی تعریف کرتے ہوئے شاندار بات کہہ ڈالی

142

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ ٹیم کے لئے نازک موقع پر سنچری بنانے والے فواد عالم کا ہر طرف چرچا ہے، ان کی اننگ کی وجہ سے پاکستان نے کراچی ٹیسٹ میں واپسی کر لی ہے، راولپنڈی ایکسپریس تو کہتے ہیں کہ سیدھی سی بات یہ ہے کہ


پاکستان 4دن میں کھیل ختم کرے اور اب بائولرز چڑھ کر گیند کریں، اتنی سخت محنت کو ضائع مت ہونے دیں۔ شعیب اختر نے کراچی ٹیسٹ کے دوسرے دن کے کھیل پر اپنے تبصرے میں کہاہے کہ

شعب اختر نے اپنے یو ٹیوب چینل پر کہا ہے کہ پاکستان واقعی فارغ ہوچکا تھا لیکن کمال فائٹ بیک ہوئی اور اصل فائٹ بیک تو کی ہی فواد عالم نے، 10 سال چپ رہا، کچھ نہیں، بیٹنگ کرتا رہا،

اوروں کی طرح بولا نہیں، چپ رہا، اللہ پاک نے اسے اس کا بدلہ دے دیا ،10 سال کی جو پابندی اس پر لگی تھی، وہ اس نے ختم کی۔


دس سال کاکون جواب دے گا کہ انہیں کیوں نہیں کھلایا مگر داد دیں کہ اب کھلانے والوں نے کھلاہی دیا، مصباح کو داد دیں کہ وہ لائے ہیں۔ یہ فواد عالم کا دن تھا، اس نے کمال کیا۔

برا لگتا ہے،عجب لگتا ہے، یہ سب تبصرے تھے لیکن انہوں نے کمال بیٹنگ کی، مجھے یہ کہنا پڑے گا کہ اگر مونچھیں ہوں تو فواد عالم جیسی ہوں ورنہ نہ ہوں کیونکہ اگر مونچھیں ہو ں اور

پھر رویہ بھی ایسا میانہ روی والا ہوتو پھر ایسی پرفارمنسز آتی ہیں۔ پاکستان اب کم سے کم 150کی لیڈ لے۔ پاکستان اب کہیں 350 یا 400 نہ بنوالے ورنہ الٹا پڑجائے گا۔پاکستان یہ میچ جیتے، جیتنے سے منیجمنٹ پر جاری دبائو ختم ہوسکتا ہے۔

شعیب اختر کہتے ہیں کہ رضوان ذرا اوپر آئے، پاکستان موقع ضائع مت کرے، بائولرز پر بھاری ذمہ داری ہے کہ وہ پاکستان کو جتوا کر دیں، پلیز موقع ضائع نہ کریں۔