فارمنس پر “ہیرو” اورخراب کارکردگی پر “زیرو” والا رویہ بدلنا ہوگا، اظہرعلی نے حیران کن بات کہہ دی

98

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
ٹیسٹ کرکٹر اظہر علی کا شکوہ ہے کہ ایک پر فارمنس پر ہیرو اور خراب کارکردگی پر زیرو بنا دیا جاتا ہے، ہمیں اس کلچر کو بدلنا ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق ٹیسٹ کرکٹر اظہر علی نے ویڈیو کانفرنس کرتے ہوئے جنوبی افریقہ کے خلاف


ٹیسٹ سیریز کی تیاریوں پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسلسل دو دن سے پریکٹس کررہے ہیں، ابھی تین سے چار پریکٹس سیشن باقی ہیں جسکا فائدہ اٹھانا ہے، ہوم کنڈیشنزپرمیزبان ٹیم کو فائدہ ضرور ملتا ہے۔

اظہرعلی نے جنوبی افریقہ کےدورہ پاکستان کو باعث فخر قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایک بڑی ٹیم پاکستان کا دورہ کررہی ہے۔ ٹیسٹ کرکٹراظہرعلی نے نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کی سیریز میں

بلے بازوں کی کارکردگی کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ انگلینڈ سیریزمیں بھی بیٹسمینوں نے فائٹ کی جبکہ نیوزی لینڈ کے خلاف بھی کسی نہ کسی کھلاڑی نے سنچری بنائی،


کھلاڑی کیساتھ اچھا اور برا وقت ساتھ چلتا رہتا ہے، کبھی کبھار بیٹسمینوں کیلئے رنز بنانا مشکل ہوجاتا ہے۔اظہرعلی کا کہنا تھا کہ دورہ انگلینڈ سے مجھے کافی حوصلہ بڑھا ہے،

اپنی کارکردگی سے کافی مطمئن ہوں، جس شاٹ پر مجھے مسئلہ ہوتا ہے اپنے کوچز سے ٹپس لیتا ہوں، یونس خان، محمد یوسف دونوں ہمارے ساتھ تجربات شیئر کرتے ہیں۔

سابق ٹیسٹ کپتان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں صرف یہی سوچ رکھنی چاہیئے کہ اچھی کرکٹ کھیلنا ہے،چیلنجزکاسامنا کرتے ہوئے ذہنی طور پر مضبوط ہونا ضروری ہے، میں ہمیشہ ٹیم کی ضروریات کےمطابق رول ادا کرتا ہوں،

مینجمنٹ مجھے جس پوزیشن پر کھیلنے کا کہیں گے اس کیلئے تیار ہوں، حالانکہ پہلے خود بھی کہتا تھا کہ ایک پوزیشن ہونی چاہیئے۔اظہرعلی کا کہنا تھا کہ

جنوبی افریقہ کے پاس اسپنرز اور فاسٹ بولر کی اچھی لائن اپ ہے،اگراسپن ٹریک بنتا ہے تو اے گیم ہمیں کھیلنا پڑے گی، جنوبی افریقہ کے خلاف بیٹسمینوں کو اتنے رنز کرناہونگے کہ بولرزدفاع کرسکیں