سعود شکیل جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز کیلئے منتخب ہونے پر خوشی سےنہال، قومی ٹیم کیلئے منتخب ہونے پر سندھ ٹیم کے ساتھی کھلاڑیوں نے کیا کیا؟دلچسپ انکشاف

81

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستانی کرکٹر سعود شکیل نے جنوبی افریقہ کے خلاف قومی ٹیم میں موقع ملنے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیشہ سے پاکستان کی نمائندگی کرنے کا خواب مکمل ہونے کا یقین تھا۔


تفصیلات کے مطا بق سرفراز احمد، اسد شفیق اور انور علی سمیت کئی قومی ٹیسٹ کرکٹرز کی رہنمائی میں اپنا لڑکپن گزار نے والے سعود شکیل نے محض 12 سال کی عمر میں ہی

باقاعدہ کلب کرکٹ کھیلنا شروع کر دی تھی۔ فیڈرل بی ایریا کراچی کی گلیوں میں کرکٹ کھیلنے والے سعود شکیل نے سری لنکا کے کمار سنگا کارا کو اپنا آئیڈیل بنایا اور

اپنے گھر سے صرف 7 کلومیٹر دور نیشنل سٹیڈیم کراچی کے تاریخی میدان میں ملک کی نمائندگی کا خواب سجایا اور پر عزم شخصیت نے 13 سال بعد ہی اس کے خواب کو حقیقت کا روپ دے دیا۔

سعود شکیل کا کہنا ہے کہ میں 15 جنوری کو منعقدہ چیف سلیکٹر قومی کرکٹ ٹیم محمد وسیم کی پریس کانفرنس نہیں دیکھ سکا مگر جیسے ہی چیف سلیکٹر نے ٹیم کا اعلان کیا تو

ٹیم ہوٹل میں موجود سندھ کرکٹ ٹیم کے کھلاڑیوں نے میرے کمرے کے دروازے پر دستک دینا شروع کر دی۔ بائیں ہاتھ کے مڈل آرڈر بیٹسمین نے کہا کہ مجھے ہمیشہ سے پاکستان کی نمائندگی سے

متعلق اپنے خواب کے پایہ تکمیل ہونے کا یقین تھا مگر گزشتہ دو سالوں سے میرے اعتماد اور حوصلے میں مسلسل اضافہ ہو رہا تھا، مجھے یقین تھا کہ جلد پاکستان کی نمائندگی کا موقع ملنے والا ہے۔

سعود شکیل کا کہنا ہے کہ کسی بھی طرز کی کرکٹ میں پاکستان کی قیادت کرنا ایک اعزاز کی بات ہے، قومی ٹیسٹ سکواڈ میں شمولیت پر بہت خوش ہوں تاہم میرا اصل ہدف تینوں فارمیٹ میں

قومی کرکٹ ٹیم کا مستقل رکن بننا ہے، میں خود کو بہت خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ پاتھ ویز کرکٹ سے آگے آیا اور سب سے بڑی سطح پر پہنچ کر ملک کی نمائندگی کا مرحلہ وار سفر اب مکمل ہونے والا ہے۔

واضح رہے کہ سعود شکیل اب تک 46 فرسٹ کلاس میچوں میں 48.78 کی اوسط سے 10 سنچریوں اور 17 نصف سنچریوں کی مدد سے مجموعی طور پر 3220 رنز بناچکے ہیں۔