فرسٹ کلاس کرکٹ میں 27607 گیندیں کروانے کےبعد آخرکار باولر کو پاکستان کرکٹ ٹیم میں جگہ مل ہی گئی

86

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ بورڈ کی سلیکشن کا معیار کیا ہے، کسی کی سمجھ میں نہیں آتا۔ اس کی مثال افتخار احمد ہیں، جنہیں عمر کے آخری حصے میں آ کر پاکستان کرکٹ ٹیم میں جگہ ملی، تفصیلات کے مطابق


پاکستان کرکٹ بورڈ کو اپنے سلیکشن کے معیار کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ جب کھلاڑی فرسٹ کلاس کرکٹ میں باربار اچھا پرفارم کر رہا ہے۔ تو اس کھلاڑی کو قومی ٹیم میں جگہ

دینی چاہیے، تاکہ وہ اپنا ٹیلنٹ دنیا کو دیکھا سکے۔ تابش خان پاکستان کرکٹ بورڈ کی نظر میں اب آئے ہیں، مگر وہ کافی عرصہ سے فرسٹ کلاس کرکٹ زبردست کارکردگی کا مظاہرہ کررہے ہیں،

مگر وہ پاکستان نیشنل ٹیم میں جگہ نہیں بنا سکے، اب ساؤتھ افریقہ کی ٹیم پاکستان پہنچ چکی ہے، جو کہ پاکستان کے خلاف دو میچوں پر مشتمل ٹیسٹ سیریز کھیلے گی، اور تین میچوں پر مشتمل ٹی ٹونٹی سیریز کھیلے گی۔


پاکستان نے ٹیسٹ سیریز کیلئے اپنی 20 رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا ہے، جس میں کافی سارے نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیا گیا ہے، ان میں فاسٹ باؤلر تابش خان بھی شامل ہیں، تابش کافی عرصہ سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے ہیں،

اب تک وہ 27607 گیندیں کروا چکے ہیں، انہوں نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں 598 وکٹیں حاصل کیں ہیں،جو کہ کسی بھی باؤلر کے مقابلے میں زیادہ ہیں، اور 17 سال سے کوشش کر رہےہیں، جب تابش خان تک یہ خبر پہنچی کہ وہ قومی ٹیم میں سلیکٹ ہو چکے ہیں،

تو وہ جذبات پر قابو نہ رکھ سکے۔ تابش خان کی عمر 36 سال ہے، وہ 17 سال سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے ہیں، انہوں نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں 24.19 کی اوسط سے 598 وکٹیں حاصل کر رکھی ہیں، اور انہوں نے 38 مرتبہ 5 وکٹیں حاصل کیں ہوئی ہیں، کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں