حارث رﺅف کی ٹیسٹ سکواڈ میں شمولیت پر سب حیران مگر کیوں؟جانیے

153

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ بورڈ کی سلیکشن کمیٹی نے ٹی 20 سپیشلسٹ باﺅلر حارث رﺅف کو جنوبی افریقہ کیخلاف ٹیسٹ سیریز کیلئے 20 رکنی قومی سکواڈ میں شامل کر لیا ہے اور اس سلیکشن کو حیران کن قرار دیا جا رہا ہے کیونکہ


تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائز لاہور قلندرز کی دریافت حارث رﺅف کو پہلی مرتبہ پی ایس ایل کھیلنے کا موقع ملا جس کے بعد آسٹریلیا کی بی بی ایل فرنچائز

میلبورن سٹارز کیساتھ ان کا معاہدہ ہوا اور انہوں نے اس ٹورنامنٹ میں دھوم مچا کر پاکستانی ٹیم میں شمولیت کی راہیں ہموار کر لی ہیں۔ حارث رﺅف اگرچہ ٹی 20 کرکٹ میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا چکے ہیں لیکن

انہوں نے صرف تین فرسٹ کلاس مقابلوں میں صرف 444 گیندیں کراتے ہوئے 39.28کی اوسط سے سات وکٹیں حاصل کی ہیں جبکہ طویل فارمیٹ کے میچز کیلئے درکار فٹنس کے حوالے سے بھی ابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا۔


دوسری جانب ڈومیسٹک کرکٹ میں تسلسل سے پرفارم کرنے والے عثمان صلاح الدین کو نظر انداز کر دیا گیا، بیٹسمین مئی 2011ءمیں ویسٹ انڈیز کیخلاف کیریئر کا پہلا ٹیسٹ کھیلنے کے بعد باہر ہوئے، ابھی تک دوسرا میچ کھیلنے کا انتظار کررہے ہیں،

انہوں نے سینٹرل پنجاب کی نمائندگی کرتے ہوئے 924رنز بنائے، وہ رواں سال کامیاب ترین بیٹسمینوں کی فہرست میں چوتھے نمبر پر تھے۔ سپنر زاہد محمود بھی قائد اعظم ٹرافی میں بہترین باﺅلنگ کے باوجود سلیکٹرز کی توجہ کا مرکز نہ بن سکے

جنہوں نے 10 میچز میں 52 وکٹیں لیں اور ٹاپ باﺅلرز کی فہرست میں ان کا تیسرا نمبر تھا تاہم چیف سلیکٹر محمد وسیم نے زاہد محمود کے عدم انتخاب پر کہا کہ زاہد محمود سلیکٹرز کے پلان کا حصہ ہیں، میٹنگ میں ان پر بات چیت بھی ہوئی، مستقبل میں انہیں موقع دیں گے۔ کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں