شان مسعود، امام الحق اور حارث سہیل سمیت دیگرکھلاڑیوں کو ٹیسٹ،سکواڈ سے کیوں ڈراپ کیا گیا؟ چیف،سلیکٹر نے بتا دیا

271

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف سلیکٹر محمد وسیم نے جنوبی افریقہ کیخلاف ہوم ٹیسٹ سیریز کیلئے 20 رکنی قومی سکواڈ کا اعلان کر دیا ہے جس میں سے شان مسعود، حارث سہیل، محمد عباس، امام الحق، شاداب خان، نسیم شاہ اور ظفر گوہر کو ڈراپ کردیا گیا ہے۔


تفصیلات کے مطابق چیف سلیکٹر نے شان مسعود کو ٹیم سے ڈراپ کرنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ اگرچہ انہوں نے ماضی میں کافی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا مگر

نیوزی لینڈ کیخلاف حالیہ سیریز میں ان کی کارکردگی قابل ذکر نہ تھی جس کے باعث ہم نے انہیں ٹیسٹ کرکٹ سے وقفہ دینے کا فیصلہ کیا ہے تاہم ان کیلئے متبادل پلان تیار کر رہے ہیں۔

حارث سہیل میں جتنا ٹیلنٹ ہے اس حساب سے ان کے اعداد و شمار نہیں ہیں جبکہ کچھ تکنیکی مسائل بھی ہیں جن پر کام ہونے والا ہے، اس لئے انہیں سکواڈ سے ڈراپ کیا گیا ہے تاکہ


تاکہ ان پر مزید کام کریں اور وہ ڈومیسٹک کرکٹ میں بہترین کارکردگی دکھا کر قومی ٹیم میں کم بیک کریں۔ فاسٹ باﺅلر محمد عباس کی حالیہ کارکردگی بہتر نہیں اور ان کے مسائل کے حوالے سے ہم نے کام بھی کر لیا ہے کہ باقی ٹیمیں جس طرح ان کے خلاف کھیل رہی ہیں اور

ان کاسٹرائیک ریٹ تیزی سے بڑھ رہا ہے، ان کے کچھ ایسے معاملات پر جن پر کام کرنے کی ضرورت ہے اور اس حوالے سے محمد عباس کی مکمل رہنمائی کی جائے گی۔ چیف سلیکٹر نے امام الحق سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ

ان کے اعداد و شمار بھی ٹیلنٹ کے مطابق نہیں ہے اور ہم اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ وہ ابھی طویل فارمیٹ کی کرکٹ کیلئے تیار نہیں اورانجری کا شکار بھی ہیں اس لئے انہیں جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز کیلئے ٹیسٹ سکواڈ میں شامل نہیں کیا گیا۔


پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیگ سپنر شاداب خان اور فاسٹ باﺅلر نسیم شاہ کےفٹنس مسائل چل رہے ہیں اس لئے انہیں بھی سکواڈ کا حصہ نہیں بنایا گیا۔ ہم نے حالات اور کنڈیشنز کے حساب سے سلیکشن کرنی ہے، اور ہمارے خیال سے ہوم سیریز کیلئے

جو کنڈیشنز بن رہی ہیں، سہیل خان ان پر پورا نہیں اترتے مگر وہ ہمارے پلانز کا حصہ رہیں گے۔ نیوزی لینڈ کیخلاف ڈیبیو کرنے والے ظفر گوہر سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے چیف سلیکٹر محمد وسیم نے کہا کہ انہوں نے صرف ایک میچ کھیلا مگر انہیں ڈراپ کیا جا رہا ہے

کیونکہ میرے خیال سے ان کی باﺅلنگ پر بہت زیادہ کام کرنے کی ضرورت ہے اور وہ ابھی نوجوان ہیں، جن کے پاس کافی وقت ہے، امید ہے کہ وہ قومی ٹیم میں زبردست کم بیک کریں گے۔ محمد وسیم نے عبداللہ شفیق، آغا سلمان، سعود شکیل، کامران غلام، محمد نواز، نعمان علی، ساجد خان، حسن علی، حارث رﺅف اور تابش کوموقع دیا ہے۔