کرکٹ کمیٹی نے قومی ٹیم کی کارکردگی پرعدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے مصباح الحق کو حیران کن با کہہ دی

80

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے پاکستان کرکٹ بورڈ کی کرکٹ کمیٹی کا اجلاس آج (منگل کو)منعقد ہوا، اجلاس میں قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور باؤلنگ کوچ وقار یونس شریک ہوئے،


اس موقع پر قومی کرکٹ ٹیم کی گزشتہ 16 ماہ کی کار کردگی کا جائزہ لیا گیا، کرکٹ کمیٹی نے قومی ٹیم کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کو رونا کی وباء اور

تجربہ کار کھلاڑیوں کی عدم موجودگی ٹیم کی مجموعی کارکردگی پر اثرانداز ہوئی۔ کرکٹ کمیٹی کے سربراہ سلیم یوسف کا کہنا ہے کہ جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز کے بعد

ایک بار پھر قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا، عالمی وباء کے باعث صرف پاکستان کرکٹ ٹیم کو ہی نہیں بلکہ انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے والے دیگر ممالک کی ٹیموں کو بھی مشکلات کا سامنا ہے،


کمیٹی کا ماننا ہے کہ ٹیم کے انتخاب اور فائنل الیون کے لیے کھلاڑیوں کے چناؤ میں بہتری ہونی چاہیے تھی۔ مشکل صورتحال سے نمٹنے کے لیے کھلاڑیوں کی تیاری میں سائنس اور ڈیٹا بیس سے مددلینے پر زور دیا گیا ہے۔

ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بولنگ کوچ وقار یونس کی آمد سے قبل چیف سلیکٹر محمد وسیم نے بھی کرکٹ کمیٹی کو اپنی سلیکشن پالیسی سے متعلق بریفنگ دی، کرکٹ کمیٹی نے اجلاس میں ڈومیسٹک کرکٹ اور ویمنز کرکٹ کی کارکردگی کا بھی جائزہ لیا۔

دوسری جانب پی سی بی کے ترجمان کی جانب سے سوشل میڈیا پر قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق کو عہدے سے ہٹائے جانے سے متعلق خبروں پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ

مصباح الحق کو عہدے سے ہٹانے کی خبروں میں کئی صداقت نہیں ہے۔ ترجمان پی سی بی نے کہا کہ مصباح الحق کرکٹ کمیٹی کے اجلاس میں پیش ہوں گے جس کے بعد کرکٹ کمیٹی اپنی سفارشات بورڈ کو دے گی۔