کامران اکمل اور احمد شہزاد پاکستان ون ڈےکپ سے باہر ہو گئے

111

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کپ ون ڈے ٹورنامنٹ کیلئے حسن علی سینٹرل پنجاب کے کپتان مقرر ہوگئے ہیں جبکہ وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل اور قومی کرکٹ ٹیم کے اوپننگ بلے باز احمد شہزاد ایونٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔


تفصیلات کے مطابق قائداعظم ٹرافی فرسٹ کلاس میں ریڈ بال کرکٹ کے اعلیٰ معیار کے میچز مکمل ہونے کے بعد اب وائٹ بال کرکٹ ٹورنا منٹ پاکستان کپ 8 جنوری سے شروع ہو رہا ہے اور 33 میچز پر

مشتمل یہ ٹورنامنٹ ڈبل لیگ کی بنیاد پر کھیلا جائے گا۔ پاکستان کپ کے تمام میچز کراچی کے تین وینیوز این بی پی سپورٹس کمپلیکس ، سٹیٹ بنک سٹیڈیم اور یوبی ایل سپورٹس کمپلیکس میں کھیلے جائیں گے جبکہ

سٹیٹ بنک سٹیڈیم 29 اور 30 جنوری کو سیمی فائنلز اور 31 جنوری کو فائنل کی میزبانی کرے گا۔ مذکورہ ٹورنامنٹ میں تقریباً 10 ملین روپے کی انعامی رقم رکھی گئی ہے

جن میں سے ٹورنامنٹ کی فاتح ٹیم کو 5 ملین روپے ملیں گے جبکہ رنرز اپ کو 2.5 ملین روپے دئیے جائیں گے۔ ٹورنامنٹ کے بہترین پرفارمرز جن میں پلیئر آف دی ٹورنامنٹ ، بہترین بیٹسمین ، بہترین باﺅلر اور بہترین وکٹ کیپر شامل ہیں،

ان میں ایک ملین روپے کی رقم یکساں تقسیم کی جائے گی جبکہ 8 لاکھ روپے کی رقم گروپ اور دونوں سیمی فائنل کے مین آف دی میچ کا اعزاز حاصل کرنے والوں میں تقسیم کئے جائیں گے، پلیئر آف دی فائنل کو 35 ہزار روپے ملیں گے۔

دوسری جانب ہیڈ کوچز نے اپنے اپنے 16 رکنی سکواڈز کو حتمی شکل دے دی ہے اور ایسے نوجوان کرکٹرز کو موقع دیا گیا ہے جنہوں نے 21-2020ءمیں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا،

قائداعظم ٹرافی میں اپنی ٹیم کے غیر معمولی کم بیک میں اہم کردار ادا کرنے والے حسن علی ہی سنٹرل پنجاب کی قیادت کریں گے جبکہ وہ 11 کھلاڑی بھی شامل ہیں جنہوں نے فائنل کھیلا، ان کے ساتھ احمد بشیر ، بلال آصف ، رضوان حسین ، صہیب اللہ اور طیب طاہر بھی شامل ہیں۔

خالد عثمان خیبر پختونخواہ کی قیادت کریں گے جبکہ جارحانہ بیٹنگ کرنے والے فخر زمان جنہوں نے نیشنل ٹی 20 کپ میں سب سے زیادہ رنز بنائے خیبر پختونخواہ کے نائب کپتان ہوں گے،ہیڈ کوچ عبدالرزاق نے قائداعظم ٹرافی کے ٹاپ باﺅلر ساجد علی اور ٹاپ بیٹسمین کامران غلام کو سکواڈ میں برقرار رکھا ہے۔

بلوچستان کے کپتان تجربہ کار بیٹسمین عمران فرحت ہوں گے جبکہ بسمہ اللہ خان کو نائب کپتان مقرر کیا گیا ہے۔ ہیڈ کوچ فیصل اقبال نے پاکستان انڈر 19 کے کھلاڑی عبدالواحد بنگلزئی پر اعتماد برقرار رکھا ہے

جنہوں نے 21-2020ءکے سیزن میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پاکستان کپ سیکنڈ الیون کے پانچ میچز میں ایک نصف سنچری کی مدد سے 187 رنز بنائے وہ ٹاپ بیٹسمینوں کی فہرست میں چوتھے نمبر پر تھے۔

ناردرن کے قائم مقام ہیڈ کوچ محمد مسرور نے محمد نواز کو کپتان مقرر کیا ہے جبکہ 16 رکنی سکواڈ میں مبصر خان بھی شامل ہیں جنہوں نے 21-2020ءکے ڈومیسٹک سیزن میں بیٹ اور بال کے ساتھ شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے

فرسٹ کلاس کے ڈیبیو میچ میں سنچری بنائی جبکہ انڈر 19 کے ون ڈے اور تھری ٹورنامنٹ میں پلئیر آف دی ٹورنامنٹ قرار پائے۔ سندھ کی ٹیم قائد اعظم ٹرافی فرسٹ کلاس میں آخری نمبر پر رہی اور اب پاکستان کپ میں سندھ کی ٹیم کم بیک کرنے کی کوشش کرے گی۔

ہیڈ کوچ باسط علی نے سعود شکیل کو کپتان بنایا ہے جبکہ عالیان محمود کو انڈر 19 کی سطح پر شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کا صلہ مل گیا ہے، وہ انڈر 19 ون ڈے کپ اور تھری ڈے میں تیسرے بہترین باﺅلر قرار پائے جنہوں نے ون ڈے کپ میں 24 اور تھری ڈے میں 20 وکٹیں لیں۔

مڈل آرڈر بیٹسمین صہیب مقصود نیشنل ٹی 20 کی فائنلسٹ سدرن پنجاب کی قیادت کریں گے جبکہ سدرن پنجاب کی جانب سے قائد اعظم ٹرافی میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے سلمان علی آغا کو نائب کپتان بنایا گیا ہے۔

فاسٹ باﺅلنگ کے شعبے میں آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے ایرون سمرز شامل ہیں جبکہ سدرن پنجاب نے پاکستان کپ ون ڈے سیکنڈ الیون کے ٹاپ دو بیٹسمینوں مختار احمد اور وقار حسین کو سکواڈ میں شامل کیا ہے جنہوں نے سدرن پنجاب کو پاکستان کپ سیکنڈ الیون جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔