برطانیہ کے دو سابق امپائروں نے ای سی بی پر مقدمہ کردیا مگرکیوں؟ وجہ بھی ایسی افسوسناک کہ ہرکوئی حیران رہ جائے

80

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
برطانیہ کےدوسابق امپائروں نےای سی بی پرنسلی امتیازبرتنےکے خلاف مقدمہ دائرکردیا ہے۔ برطانوی میڈیا کے مطابق جون ہولڈراوراسماعیل داود نامی سابق امپائروں نےای سی بی پرالزام لگایا ہےکہ ان کے ساتھ بورڈ نے نسلی امتیاز برتا جس کےباعث ان کا امپائرنگ کیریئر جلد ختم ہوگیا۔


برطانیہ کے سابق سیاہ فام فرسٹ کلاس کرکٹر جون ہولڈر نے طویل عرصے تک برطانیہ کی ڈومیسٹک کرکٹ میں امپائرنگ کی ہے جبکہ وہ 11 ٹیسٹ اور 19 ون ڈے انٹرنیشنل میچزمیں بھی امپائرنگ کرچکے ہیں۔

جون ہولڈرکو1991 میں ویسٹ انڈیز سےٹیسٹ میچ کےدوران انگلش کھلاڑی کے خلاف بال ٹیمپرنگ کی شکایت لگانےکےکچھ عرصےبعد ای سی بی کی امپائرنگ لسٹ سے باہرکردیا گیا تھا۔

جنوبی ایشیائی نژاد اسماعیل داؤد جوکہ طویل عرصہ کاؤنٹی کرکٹ کھیلتے رہے ہیں کا الزام ہےکہ ای سی بی نےانہیں جان بوجھ کرامپائرنگ کےامتحان میں بار بار فیل کیا جس کے باعث وہ ریزرو امپائرسےآگےنہ بڑھ سکےاورجلد ہی ان کا کیرئیرختم ہوگیا۔