دورہ نیوزی لینڈ،انضمام الحق نے بابراعظم کی جگہ کس کھلاڑی کو کپتان بنانے کی تجویز دے دی، پاکستانی خوش ہوجائیں گے

462

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان و سابق چیف سلیکٹر انضمام الحق نے بھی دورہ نیوزی لینڈ میں سرفراز احمد کو کپتان بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے ان کے حق میں دلائل دے دیئے اور ساتھ ہی ٹیم منیجمنٹ کی کلاس لگاتے ہوئے


کلاس لگاتے ہوئے ان کی 2 سنگین غلطیوں کا بتایا اور یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ نیوزی لینڈ پاکستان کے ساتھ کون سی شرارت کرنے والا ہے. اپنے یوٹیوب پروگرام میں میچ ونر انضمام الحق کہتے ہیں کہ

مجھے ٹیم منیجمنٹ سے مایوسی ہوئی جو بابر اعظم کے ان فٹ ہونے پر کھلم کھلا اپنی پریشانی کا اعتراف کر رہے ہیں. انھوں نے مخالف ٹیم کو اپنی کمزوری دے دی،

اپنے کیمپ کی پریشانی بتائی ،اب کیویز مزید چڑھ کر اٹیک کریں گے. ایسا کبھی نہیں ہوتا کہ ٹیم اپنی کمزوری یا پریشانی بتاتی پھرے. ٹھیک ہے کہ بابر اعظم بڑے کھلاڑی ہیں.اس کے ان فٹ ہونے سے نقصان ہوگا مگر

اس کایہ مطلب نہیں کہ اس انداز میں دهنڈورا پیٹا جائے. ہر ایک کا ایک بیک اپ ہوتا ہے .پلاننگ ہوتی ہے. انضمام نے مزید کہا کہ پہلے بھی نشاندہی کی تھی کہ ٹی 20 میں ایک اوپنر کی کمی تھی اور اب دوسرا اوپنر بھی زخمی ہوگیا.

ٹیم میں اب ایک بھی ریگولر اوپنر نہیں ہے. سابق کپتان انضمام الحق نے مزید کہا کہ شاداب بھی ان فٹ ہیں. آج بھی معمولی پریکٹس کی.ان کے پاس کپتانی کا تجربہ بھی نہیں اور وہ 100 فیصد فٹ بھی نہیں تو جب کپتان زخمی،نائب زخمی ہوگا تو کپتانی کون کرےگا؟ انضمام نے پی سی بی کو تجویز دی ہے کہ

ایسی صورت میں سرفراز احمد سے بہتر کوئی کپتان نہیں ہوگا کیونکہ ایک تو اس فارمیٹ میں وہ پاکستان کے آخری کپتان رہے. 2 سال قبل نیوزی لینڈ میں ٹی 20 سیریز بھی جیتے تھے اور کھلاڑیوں و جدید کرکٹ سے آگاہ بھی ہیں اس لئے میرے خیال میں وہ موزوں رہیں گے.محمد حفیظ پرانے کپتان ہیں. ان کو ذمی داری دینا مناسب نہیں ہوگا.

انضمام نے پی سی بی کی پالیسی کو بھی سخت ہدف،تنقید بنایا اور کہا کہ ایک وقت میں رضوان کو ٹیسٹ کپتان بنائے جانے کی باتیں تھیں تو جب اس کو اس قابل سمجھا گیا ہے تو اسے ہی تینوں فارمیٹ کا کپتان بنایا جاتا. آج یہ ایشو نہ ہوتا.