قومی ٹیم کیلئے ماہرنفسیات کا تقرر بہت ضروری ہو گیا ہے“ وسیم اکرم نے اپنی تجویز کے حق میں،تشویشناک دلائل بھی دیدیئے

73

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق کپتان اور فاسٹ باؤلر وسیم اکرم نے نیوزی لینڈ کے دورہ پر موجود قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کیلئے ماہر نفسیات کے تقرر کو ضروری قرار دیدیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق


میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وسیم اکرم نے کہا کہ پاکستانی کرکٹرز کو پیش آنے والی صورتحال کے بعد 14 دن کمرے میں محصور رہنے سےذہنی طور پر متاثر ہونا فطری عمل ہے،

میں خود آسٹریلیا میں 6 دن بائیو سیکیور ماحول میں رہا، جانتا ہوں کہ ان حالات میں کیا گزرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے 10دن اہم ہوں گے، میں نے سنا ہے کہ ملنے والے وقت میں

پاکستانی ٹیم صبح میں ٹیسٹ جبکہ شام میں ٹی 20 مقابلوں کی تیاری کرے گی، مشکلات کے باوجود ہمارے کھلاڑیوں کے حوصلے بلند ہیں تاہم تیاری کیلئے وقت کم ہے، میری ذاتی رائے میں ٹیم کے ساتھ ماہر نفسیات کو رکھنا ضروری ہے، امید ہے کہ


ٹیم مینجمنٹ معاملات کو دیکھ لے گی، نیوزی لینڈ میں وہاں کی حکومت کے قوانین پر عمل کرنا ہوگا، بعض،پیچید گیوں کے معاملے میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کو اپنا کردار ادا کرتے ہوئے دونوں حکومتوں سے بات کرنا چاہیے۔

وسیم اکرم نے کہا کہ نیوزی لینڈ کا دورہ ہمیشہ مشکل ہوتا ہے، میزبان ٹیم بہترین فارم میں ہے، اس نے ویسٹ انڈیز کے خلاف بہترین کرکٹ کھیلی، ٹی 20 میں پاکستان ٹیم بہتر ہے لیکن

ٹیسٹ کرکٹ میں کیویز کو برتری حاصل ہو گی، طویل فارمیٹ میں پاکستانی باﺅلرز کو مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، ان کو اپنی لینتھ بہتر بنانا ہوگی۔