کھلاڑیوں کا اصل کام انگریزی سیکھنا نہیں بلکہ،میدان میں کھیلنا ہے، ثقلین مشتاق نے شاندار بات کہہ ڈالی

140

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
سابق سپنر ثقلین مشتاق نے انگلش کا ’سبق‘ پڑھنے والے پاکستانی کھلاڑیوں کو میدان پر کارکردگی کی اہمیت یاد دلا دی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے 43 سالہ ہیڈ آف پلیئرز ڈویلپمنٹ ثقلین مشتاق نے نیشنل سٹیڈیم کراچی میں بات کرتے ہوئے کہا کہہ


پاکستانی کھلاڑیوں کو زبان کی بجائے کارکردگی پر غلبہ حاصل کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ کھلاڑیوں کا اصل کام میدان میں کھیلنا ہے نہ کہ انگریزی زبان میں کامل ہونا۔

سابق آف سپنر نے کہا کہ پاکستانی کھلاڑیوں کو اردو بولنے پر فخر کرنا چاہیے کیونکہ یہ ہماری قومی زبان ہے۔ ٹیم کے ڈریسنگ روم تک رسائی سے کھلاڑیوں اور ان کے درمیان کھلاڑیوں کے ساتھ اعتماد پیدا کرنے میں

کچھ وقت لگے گا، آپ یہ کام صرف ایک یا دو ملاقاتوں سے نہیں کرسکتے ہیں لیکن آپ کو کھلاڑیوں سے دوستی کرنے کے لئے مستقل بنیادوں پر ملنے کی ضرورت ہے۔