بابراعظم کو میچ ونر بننے کا گر سیکھنا ہوگا، انضمام الحق نے شاندار بات کہ دی

115

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
قومی ٹیم کے سابق کپتان انضمام الحق کا کہنا کہ بابراعظم کو اب بھی اپنی بلے بازی میں بہت کچھ بہتر بنانے کی ضرورت ہے ۔ 50 سالہ انضمام الحق کا کہنا ہے کہ انہیں اس بات پر کوئی شبہ نہیں کہ بابراعظم


بابر اعظم عظیم بلے باز ہیں لیکن انہیں زمبابوے کے خلاف تیسرے ون ڈے میچ کو ختم کرنا چاہیئے تھا ۔ انضمام الحق کا کہنا تھا کہ بابر اعظم نے تیسرے ون ڈے بہترین کھیل پیش کیا لیکن

انہیں اب بھی اپنی بیٹنگ میں بہتری لانے کی ضرورت ہے، جب بابر اور وہاب کھیل رہے تھے تو انہیں 10،15 گیندوں پہلے میچ ختم کردینا چاہیئے تھا، بابر کو سینئر کھلاڑی ہونے کے ناطے

سٹرائیک زیادہ سے زیادہ اپنے پاس رکھنی چاہیئے تھیں کیوں کہ وہ اچھی گرائونڈ شاٹس کھیلتے ہیں لیکن آخری اوورز میں مختلف قسم کی کرکٹ کھیلی جاتی ہے۔

قومی ٹیم کے سابق چیف سلیکٹر کا کہنا تھا کہ جب آپ ہدف کا تعاقب کر رہے ہو تے ہیں تو آپ کو اوسط برقرار رکھنے کی ضرورت ہو تی ہے جس کے لیے آپ کو بڑی شاٹس کھیلنا ہوتی ہے اور

بابر اعظم کے پاس یہ کلاس موجود ہے، اگر آپ بڑی شاٹس نہیں ماریں گے تو اچھی ٹیمیں آپ کو میچ نہیں جیتنے دیں گی، اگر آپ زمبابوے جیسی ٹیم کے خلاف بڑی شاٹس نہیں کھیل سکتے تو

بڑی ٹیمیں تو آپ کو ایسا موقع بھی نہیں دیں گی، بابر کو یہی سیکھنا ہے کہ بڑی شاٹس کیسے کھیلنی ہیں اور ہدف کا کامیابی سے تعاقب کیسے کر نا ہے۔ انضمام الحق کا مزید کہنا تھا کہ

بابراعظم کو دوسری چیز یہ سیکھنی ہے کہ میچ کیسے ختم کیا جا تا ہے ، اگر وہ رنز بنا رہے ہیں تو انہیں اپنی ٹیم کو تن تنہا میچز جتوانے چاہیئیں، اگر پاکستان ان کے رنز بنانے کے باوجود بھی

میچ نہیں جیت رہا تو یہ پریشانی کی بات ہے ۔ یاد رہے کہ تیسرے ون ڈے کا کھیل سپر اوور میں جانے کے باوجود پاکستان زمبابوے کے خلاف مقابلہ جیتنے میں ناکام رہا تاہم سیریز 2-1 سے اپنے نام کر لی ۔