دورہ انگلینڈ کے دوران قومی کھلاڑی آپس میں لڑسکتے ہیں“ انضمام الحق نے انتہائی تشویشناک بات کہہ دی

123

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پی سی بی کے سابق چیف سلیکٹر اور سابق کپتان انضمام الحق نے کہا ہے کہ دورہ انگلینڈ میں کھلاڑی گراؤنڈ سے ہوٹل اور ہوٹل سے گراؤنڈ تک ہی محدود رہنے کے باعث ڈپریشن کا شکار ہوسکتے ہیں اور آپس میں


تفصیلات کے مطابق پاکستان کے سابق لیجنڈ بیٹسمین نے کہا کہ دورہ انگلینڈ میں ٹیم کو گراؤنڈ پر تو اتنے سخت چیلنج کا سامنا نہیں ہوگا کیونکہ پاکستان نے انگلینڈ میں ہمیشہ اچھا کھیلا ہے، لیکن

گراؤنڈ سے باہر چیلنج کا سامنا ضرور رہے گا اور اس چیلنج سے نبرد آزما ہونے کیلئے کرکٹرز کا ذہنی طور پر مضبوط ہونا بہت ضروری ہے۔ پہلی بار ہورہا ہے کہ پلیئرز بالکل بھی

کہیں آنا جانا نہیں کرسکیں گے اور تین مہینے محدود رہیں گے، جتنی بھی سہولیات ہوں ہر کسی کا دل چاہتا ہے کہ دو تین چار روز بعد کسی نہ کسی سے ملاقات کریں اور باہر جائیں۔


انضمام الحق نے کہا کہ باہر جانا، لوگوں سے ملنا پلیئرز کیلئے ضروری ہوتا ہے کیونکہ اس بغیر کھلاڑی ریلیکس نہیں ہوپائیں گےاور دباؤ میں رہیں گے جس کی وجہ سے ڈر ہے کہ

کہیں انہیں ڈپریشن نہ ہوجائے اور جب سب پلیئرز طویل عرصہ تک ایک جگہ ہی محدود رہیں گے تو خدشہ ہوگا کہ کہیں وہ آپس میں لڑ نہ پڑیں۔ اس صورت حال میں ٹیم مینجمنٹ کا ماحول اچھا رکھنا بہت ضروری ہے اور

آپس کی ہم آہنگی کو یقینی بنانا بھی کافی ضروری ہوگا۔ پاک انگلینڈ سیریز پر مزید بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بابر اعظم سیریز میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔