سابق اوپنر بیٹسمین نےمصباح الحق کی کار کردگی پر سوال اٹھاتے ہوئے تنقید کے نشتر چلا دئیے

60

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
سابق اوپنر بیٹسمین نے مصباح الحق کی کارکردگی پر سوال اٹھاتے ہوئے تنقید کے نشتر چلا دئیے اورانکی موجودگی کوخطرہ قرار دیدیا، جی ہاں ہم بات کر رہے ہیں سابق لفٹ ہنڈڈ بیٹسمین عامر سہیل کی جوکہ کافری عرصہ سے کرکٹ سے دور ہیں مگر


ایک انٹرویو کے دوران عامر سہیل نے کہا کہ جب تک مصباح الحق بابر اعظم کو لیڈ کریں گے تب تک پاکستان کی کرکٹ ٹھیک نہیں ہو سکتی ہے، عامر سہیل نے مزید کہا کہ

آپ اس بات کا اندازہ اس بات کےلگا لیں کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے بلے بازی کے لیے یونس خان کو کوچ رکھا ہے، اس کا یہ مطلب ہے کہ پی سی بی کو مصباح الحق پر اب اتنا اعتماد نہیں رہا ہے،

عامر سہیل شروع سے ہی ایکبلنٹ قسم کے آدمی رہے ہیں اور ہوں نے کبھی بھی کوئی بات چھپ کر نہیں کی ہے اور شاید یہی وجہ ہے کہ لوگ ان کو زیادہ پسند نہیں کرتے ہیں

لوگوں میں ہم ان کی بات کر رہےہیں جو ان کے ساتھی رہ چکے ہیں، عامر سہیل شروع سے ہی اس مزاج کے مالک ہیں اور وہ ہمیشہ سے ہی سیدھی بات کرتے ہیں،

انھوں نے مصباح پر مزید بات کرتے ہوئےکہا کہ مصباح کو 3 سال کے کنٹریکٹ پر پی سی بی نے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کی کرسی پر رکھا تھا اور اب اگر آپ ایک نظر اس عرصہ کے دوران پاکستان ٹیم کی کارکردگی پر نظر دوڑائیں تو آپ کو

مصباح الحق کی کارکردگی کا لگ پتہ جائے گا، انھوں نے مزید کہا کہ جب سے مصباح الحق پاکستان کرکٹ ٹیم کےکوچ اور چیف سلیکٹر بنے ہیں تب سے لیکر پاکستانی کرکٹ ٹیم 15 میچز میں سے صرف 6 میچ جیت سکی ہے، اور اگر

ہم مزید گہرائی میں جائیں تو ہمیں پتہ چلتا ہے اس میں ایک ٹیسٹ سیریز میں وائٹ واش بھی شامل ہے اور ایک ٹی ٹوینٹی میں بھی وائٹ واش شامل ہے اور اسی وجہ سے اور بھی بہت سے سابق کھلاڑی

مصباح الحق کے اھم عھدوں پر فائز ہونے پر اعتراض کرتے نظر آئے ہیں، اس کے عامر سہیل نے یہ بھی کہا کہ جوآدمی خود ساری عمر ڈیفنس کرتے کرکٹ کھیلی وہ کس طرح اپنی ٹیم کو اٹیک کرنے کی ترغیب دے سکتا ہے،

انھوں نے کہا کہ اس کے مزاج میں ہی یہ چیز نہیں ہے تو پھر وہ کس طرح کر سکتا ہے، یہاں پر پھر انھوں نے مصباح کےدور میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی شکشت کو یاد کروایا