میں نے پہلی مرتبہ ٹنڈولکر پر جملہ کسا تو ان کے جواب نے اتنا شرمندہ کیا کہ پھر کبھی ان کیخلاف ’سلیجنگ‘ نہیں کی“ ثقلین مشتاق نے اپنے کیرئیر کے اہم راز سے پردہ اٹھا دیا

221

کرکٹ سے جڑی ہرخبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لایک کریں
پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق آف سپنر ثقلین مشتاق نے شارجہ کپ 1997ءکے دوران سچن ٹنڈولکر کیخلاف ’سلیجنگ‘ کے دوران پیش آنے والے دلچسپ واقعے سے پردہ اٹھا دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ثقلین مشتاق نے کہا کہ


میں انٹرنیشنل کرکٹ میں اس وقت بالکل نیا تھا جب پہلی مرتبہ سچن ٹنڈولکر پر جملے کسے۔ یہ 1997ءمیں کھیلا جانے والا شارجہ کپ تھا جہاں میرے سلیجنگ کرنے پر ٹنڈولکر خاموشی سے میرے پاس آئے اور کہا کہ میں نے کبھی تمہارے ساتھ بدتمیزی نہیں کی، تو تم میرے ساتھ کیوں بدتمیزی کر رہے ہو؟ میں اس قدر شرمندہ ہوا کہ یہ بھی سمجھ نہیں پا رہا تھا کہ انہیں کیا جواب دوں۔ ثقلین مشتاق نے بتایا کہ ”سچن ٹنڈولکر نے مجھ سے کہا کہ میں تمہیں ایک اچھا کھلاڑی اور انسان سمجھتا ہوں جس پر میں اتنا شرمندہ ہو اکہ پھر کبھی ان پر جملہ نہیں کسا۔ میں یہ تو نہیں بتا سکتا کہ میں نے ٹنڈولکر سے کیا کہا لیکن وہ میچ ختم ہونے کے بعد میں نے ان سے معافی مانگی تھی، اس کے بعد حتیٰ کہ وہ مجھے باﺅنڈریز بھی لگا رہے ہوتے تو میں نے کبھی ان پر جملہ کسنے کے بارے میں سوچا تک نہیں۔“